بُرج اسد کی مشہور شخصیات
اشفاق احمد
اشفاق احمد پاکستان کے نامور افسانہ نگار، ڈرامہ نگار اور نثر نگار ہیں۔ ادب کی دنیا میں انکی خدمات قابل ستائش ہیں۔ انکی تحریریں بھٹکے ہوئے انسانوں کیلئے بھی راہ راست کا سبب ہیں۔ انکے ڈرامے اور ناول ریڈیو اور ٹی وی دونو ں ہی کی زینت بنے ہیں۔ ہجرت کے بعد پاکستان آگئے۔ ہجرت کے دوران اشفاق صاحب اعلان کرنے کا کام کرتے تھے اور اسی وجہ سے انھیں ریڈیو آزاد کشمیر میں نوکری دے دی گئی۔ انکی آواز اتنی اچھی تھی کہ لوگ بڑے شوق سے سنتے تھے۔
گورنمنٹ کالج لاہور میں اردو لٹریچر پڑھا۔ کالج میں بانو قدسیہ انکی کلاس فیلو تھی اور وہیں اشفاق صاحب نے فیصلہ کر لیا کہ عمر بھر کے ساتھ کیلئے بانو ہی چاہیئے۔ بانو بھی کہانیاں لکھتی تھی اور یہ بھی، دونوں کی جوڑی ایک دم فٹ تھی۔ اشفاق صاحب کو بانو کا دل جیتنے کیلئے کئی جتن کرنے پڑے، کیونکہ بانو عام لڑکیوں جیسی تو تھی نہیں۔
انہوں نے روم جا کروہاں کی یونیورسٹی میں بھی اردو پڑھائی۔ اٹلی میں اردو نیوز کاسٹر کی خدمات بھی انجام دیں۔ انکی خدمات کی وجہ سے ستارہ امتیاز سے بھی نوازا گیا۔ اشفاق احمد اب دنیا میں نہیں رہے، مگر ان کی تحریریں نوجوان نسل کیلئے آج بھی سبق آموز ہیں۔
تاریخ پیدائش اور بُرج
تاریخ پیدائش: 22 اگست 1925ء۔ مقام: برٹش انڈیا
آئیے ذرا اشفاق احمد کی تاریخ پیدائش پر غور کرتے ہیں اور ان کی شخصیت کا حال جاننے کی کوشش کرتے ہیں۔
برج اسد کے لوگوں میں عام لوگوں سے زیادہ ہنر پائے جاتے ہیں یہ اپنی ذات کو جانچنے میں کمال رکھتے ہیں۔ انکا وقار ہر کام میں نظر آتا ہے جس کام میں ہاتھ ڈالتے ہیں اسے سونا کر دیتے ہیں۔ لیکن بس انکی تیزی انکے لیے پریشانیوں کا باعث بنتی ہے۔ اگر یہ جلد بازی چھوڑ دیں تو کیا ہی بات ہے۔
اشفاق ا حمد میں یہ تمام عادات نمایاں ہیں۔

 
 
مشہور اسد شخصیات کے متعلق دلچسپ حقائق
نپولین
جارج برنارڈشا
راجر فیڈرر
ملنڈا بل گیٹس
نیل آرمسٹرانگ
مشہور اسد شخصیات کے متعلق دلچسپ حقائق
جارج برنارڈشا
نپولین
راجر فیڈرر
ملنڈا بل گیٹس
نیل آرمسٹرانگ


 
 
 
ہوم پیج دیگر منتخب آرٹیکلز

ڈونلڈ ٹرمپ کا بُرج
پورا نام ڈونلڈ جون ٹرمپ ہے۔ جو کہ امریکہ کے پینتالیسویں صدر مقرر ہوئے۔ انکی شہرت کے ڈنکے پوری دنیا میں مشہور ہیں۔ یہ اپنی الگ سی شخصیت کی وجہ سے کئی بار تنقید کا نشانہ بن چکے ہیں۔ ڈونلڈ نے برسراقتدار آتےہی سیاسی میدان میں تہلکہ مچا دیا ہے۔ جب بھی خطاب کرتے ہیں ہمیشہ سنسنی مچا دیتے ہیں۔ امریکہ کی تاریخ کے قابل ترین لوگوں میں انکا شمار ہوتا ہے۔ یہ دنیا کے امیر ترین لوگوں کی فہرست میں بھی موجود ہیں۔ ہر شعبے میں انھوں نے اپنا لوہا منوایا ہے۔
ٹرمپ بڑی ہی رنگین طبیعت کے مالک واقع ہوئے ہیں کیونکہ اب تک تین شادیاں کر چکے ہیں۔ اسکے ساتھ ساتھ اینا نکلوس سمتھ اور ڈونلڈ کے افئیر کی باتیں بھی گردش میں آئیں جو کہ سچ بھی تھی۔ حیرت انگیز بات یہ ہے کے اتنی بڑی شخصیت کے بال انکی بیگم ملیانا کاٹتی ہیں۔ جی ہاں! ملیانا ہی انکے مشہور بالوں کو کاٹتی ہیں۔
ڈونلڈ تھوڑے عجیب ہیں کیونکہ یہ جناب کسی سے بھی ہاتھ نہیں ملاتے، انکا ماننا ہے کہ کسی کی استعمال شدہ چیز کو ہاتھ لگانا انکی شان کے خلاف ہے۔ حتیٰ کے لفٹ کے بٹن کو بھی دبانا پسند نہیں کرتے کیونکہ اس پر دوسرے لوگ ہاتھ لگا چکے ہوتے ہیں۔
تاریخ پیدائش اور بُرج
آئیے ذرا ڈونلڈ ٹرمپ کی تاریخ پیدائش پر غور کرتے ہیں اور ان کے بُرج کا حال اور ان کی کامیابی کا راز جاننے کی کوشش کرتے ہیں۔
تاریخ پیدائش: 14 جون 1946 (عمر 71 سال)۔ مقام: نیویارک امریکہ
تاریخ پیدائش کے لحاظ سے ڈونلڈ ٹرمپ کا بُرج جوزا (Gemini) ہے۔ بُرج جوزا والے بڑے تخلیقی اور ماہر لوگ ہوتےہیں۔ یہ لوگ بہت حساس ہوتے ہیں جو کہ چھوٹی چھوٹی بات پر جزباتی ہو جاتے ہیں۔ جیسا کہ اکثر ٹرمپ صاحب بھی نظر آتے ہیں۔ انکے پاس بہت گہرے جذبات ہوتے ہیں جسکی وجہ سے یہ تنہائی کو زیادہ پسند کرتے ہیں۔ یہ لوگ خود کو مصروف رکھنے اور وقت کو بہتر طور پر استعمال کرنے کے قائل ہوتے ہیں۔ یہ لوگ اپنی مرضی کے مطابق چلنے والے لوگوں میں شامل ہیں۔
ڈونلڈ ٹرمپ میں یہ تمام خصوصیات واضح طور پر دیکھی جا سکتی ہیں۔

 

لیڈی ڈیانا کا بُرج
لیڈی ڈیانا برطانوی شہزادہ چارلس کی پہلی بیوی اور پرنس ولیم اور پرنس ہیری کی ماں تھی۔ ڈیاناکی فیملی کے برطانیہ کے شاہی خاندان کے ساتھ کئی نسلوں سے تعلقات تھے۔ بچپن میں ہی ڈیانا کے والدین کی طلاق ہو گئی جس کی وجہ سے ڈیانا کو مشکل دن دیکھنے پڑے اور اس کا بچپن ناخوشگوار حالات میں گزرا۔ او لیول کے امتحان میں دو بار فیل ہوئی لیکن خدمت خلق کے شعبے میں اسے سکول سے ایوارڈ ملا۔ اسے پیانو بجانے اور سوئمنگ کا بہت شوق تھا۔ ڈیانا نے شروع میں کم تنخواہ پر نوکریاں بھی کیں، کبھی سکول میں تو کبھی ڈانسنگ اکیڈمی میں اور کبھی کسی ہوٹل میں۔
سولہ سال کی عمر میں ڈیانا پہلی بار شہزادہ چارلس سے ملی۔ اس وقت شہزادہ ڈیانا کی بڑی بہن سے ملنے آیا تھا۔ شہزادہ نے اسے دیکھ کر اپنی دلہن بنانے کا ارادہ کرلیا۔ 19 سال کی عمر میں اسکا رشتہ پرنس چارلس سے جوڑ دیا گیا۔ اس کی شادی کا جوڑا آج تک کی تاریخ کا سب سے لمبا جو ڑا تھا جسکی لمبائی 25 فٹ تھی۔ شادی کرتے وقت شاہی خاندان کا رواج تھا کہ بیوی وعدہ کرتی تھی کہ ہمیشہ خاوند کے پیچھے چلے گی، لیکن ڈیانا نے یہ شر ط کٹوا دی۔ پہلی بار کسی جوڑی نے یہ رسم بدلی۔
ڈیانا عوام میں اپنی ملنساری اور عاجزی کیوجہ سے بہت مشہور تھی کیونکہ یہ لوگوں کی مدد کیلئے ہر حد پار کر جاتی تھی، اپنے کپڑے تک بیچ کر چیرٹی کر دیا کرتی تھی۔ ڈیانا کی ایک بہت اچھی عادت یہ بھی تھی کہ کوئی اس کے ساتھ ذرا سی بھی نیکی کرتا تویہ اسے تھینک یو نوٹ ضرور بھیجا کرتی تھی۔ اور یہی عادت اس نے اپنے بیٹوں میں بھی منتقل کی۔ پرنس چارلس کے اپنی گرل فرینڈ کمیلا سے بڑھتے ہوئے تعلقات کی وجہ سے نوجوانی میں ہی ڈیانا اور چارلس میں طلاق ہوگئی۔ ڈیانا سے ہر رائل ہائنس کا خطاب واپس لے لیاگیا، البتہ ویلز کی شہزادی کا خطاب اس کے پاس رہنے دیا گیا۔ طلاق کے ایک سال بعد1997ء میں ڈیانا ایک ٹریفک ایکسیڈنٹ میں ہلاک ہو گئی۔
تاریخ پیدائش اور بُرج
تاریخ پیدائش: 1جولائی1961 (عمر36 سال) ۔ مقام: انگلینڈ
آئیے ذرا لیڈی ڈیانا کی تاریخ پیدائش پر غور کرتے ہیں اور ان کی شخصیت کا حال جاننے کی کوشش کرتے ہیں۔
تاریخ پیدائش کے مطابق انکا برج سرطان ہے۔ برج سرطان کے لوگوں میں قدرت نے انسانیت کا جذبہ رکھا ہوتا ہے۔ یہ کافی ہمدرد ہوتے ہیں۔ وطن اور گھر سے محبت کرتے ہیں اور کافی حساس بھی ہوتے ہیں۔ لیکن انھیں غصہ جلدی آتا ہے۔ شک کرنے کی عادت بھی رکھتے ہیں اور اپنے پیاروں کے معاملے میں کافی محتاط رہتے ہیں۔ موڈی اور جذباتی بھی ہوتے ہیں۔ انہیں زیادہ شکی نہیں ہونا چاہیے۔
لیڈی ڈیانا میں یہ تمام خوبیاں دیکھی جا سکتی ہیں۔


اپنے تاثرات بیان کریں !