آپ کا مہینہ کیسا گزرے گا؟

اگر تمام تر کوششوں کے باوجود آپ کو اپنی کامیابی کافی دور نظر آتی ہے تو دل برداشتہ نہ ہوں۔صبر کے ساتھ کوشش جاری رکھیں۔اگر آپ نے صبر پر عبور حاصل کر لیا تو گویا ہر چیز پر عبور حاصل کر لیا۔دراصل ہر کامیابی کی ایک قیمت ہوتی ہے،بس آپ وہ قیمت ادا کر دیں۔
قدرت کے کچھ بنیادی قوانین ہیں،اگر آپ ان کی پابندی کریں گے توتھوڑی محنت کے ساتھ بھی ایک دن ضرور کامیاب ہوجائیں گے۔لیکن اگر آپ نے ان قوانین کو فالو نہ کیاتوجتنی مرضی محنت کر لیں،آپ منزل پر نہیں پہنچ سکیں گے،اور آپکی محنت ضائع ہو جائے گی۔
قدرت کے کچھ بنیادی قوانین ہیں،اگر آپ ان کی پابندی کریں گے توتھوڑی محنت کے ساتھ بھی ایک دن ضرور کامیاب ہوجائیں گے۔لیکن اگر آپ نے ان قوانین کو فالو نہ کیاتوجتنی مرضی محنت کر لیں،آپ منزل پر نہیں پہنچ سکیں گے،اور آپکی محنت ضائع ہو جائے گی۔
اگر آپ زیادہ خوشی،زیادہ دولت اور زیادہ کامیابی حاصل کرنا چاہتے ہیں تواپنی زندگی کےمقصد اور اہداف (Goals) کا تعین ضرور کر لیجئے۔زندگی میں مقصد کی اہمیت اتنی زیادہ ہے کہ جو لوگ خود کشی کرتے ہیں،وہ یہ انتہائی قدم اس لئے اٹھاتے ہیں کیونکہ انھیں اپنی زندگی میں کوئی مقصد نظر نہیں آتا۔مقصد کا ہی دوسرا نام زندگی ہے۔
اگر آپ زیادہ خوشی،زیادہ دولت اور زیادہ کامیابی حاصل کرنا چاہتے ہیں تواپنی زندگی کےمقصد اور اہداف (Goals) کا تعین ضرور کر لیجئے۔زندگی میں مقصد کی اہمیت اتنی زیادہ ہے کہ جو لوگ خود کشی کرتے ہیں،وہ یہ انتہائی قدم اس لئے اٹھاتے ہیں کیونکہ انھیں اپنی زندگی میں کوئی مقصد نظر نہیں آتا۔مقصد کا ہی دوسرا نام زندگی ہے۔
گھر میں کسی مناسب جگہ پرپرندوں کے لئےپانی اور باجرہ کا انتظام کریں۔اس سے آپ کے رُکے ہوئے کام بھی ہو جائیں گے۔
یاد رکھیں کہ صدقہ بے شمار مصیبتوں سے آپ کو بچا سکتا ہے،جس میں ناگہانی موت بھی شامل ہے۔


 
 
 
ہوم پیج دیگر منتخب آرٹیکلز

عمران خان کا بُرج
پورا نام احمد خان نیازی عمران ہے لیکن اتنے طویل نام کے ساتھ چلنا بہت مشکل تھا سو عمران خان سے ہی گزارا کر رہے ہیں۔ انکی شہرت آج کل ساتویں آسمان پہ ہے۔ کوئی بھی دن ایسا نہیں ہوتا جب یہ ہیڈ لائنز میں نظر نہ آئیں۔ انکا کرکٹ کیرئیر شاندار رہا ہے۔ 1992 ء میں عمران خان نے ورلڈ کپ جتوا کرجو تاریخ رقم کی وہ آج تک بےنظیر ہے۔ شوکت خانم میمویل ہسپتال بنا کر خدمت خلق بھی کر رہے ہیں اور سیاسی جماعت بنا کر سیا ست بھی۔
شاندار وجاہت رکھنے والا یہ شخص جوانی سے ہی خواتین سے گھرا رہا ہے۔ عمران خان نے پہلی شادی 1995 ء میں برطانوی صحافی جمائمہ گولڈ سمتھ سے کی۔ 21 سالہ جمائمہ نے محبت میں اسلام بھی قبول کیا لیکن یہ شادی کامیاب نہ ہوئی اور2004 ء میں دونوں کی طلاق ہوگئی۔ انکی ازدواجی زندگی ہمیشہ سے ہی سیاست کی نظر ہوئی کیونکہ ریحام خان کیساتھ دوسری شادی کا انجام بھی طلاق تھا۔ گلالئی نے بھی ان پہ الزام لگائے کہ عمران خان ان سے شادی کرنا چاہتے ہیں لیکن وہ ثابت نہیں ہوئے۔ بہر حال عمران خان اب بشریٰ بی بی سے تیسری شادی بھی کر چکے ہیں۔ انکی اہلیہ ایک نہایت مذہبی خاتون ہیں، بلکہ روحانی شخصیت ہیں۔
سیاست میں عمران خان نےچند برسوں سے تہلکہ مچا رکھا ہے۔ نواز شریف کے خلاف انکے دھرنوں نے پاکستانی سیاست کو ایک نیا رنگ دیا۔ نوجوان نسل نے انکے دھرنوں میں جان ڈال کر انکا خوب ساتھ دیا۔ 2018 ء کے الیکشن میں عمران خان کی پارٹی نے بہت بڑی کامیابی حاصل کی ہے۔ عمران کا کہنا ہے کہ وہ شخصیات کی بجائے اداروں کی مضبوطی کے قائل ہیں۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ عمران خان بطور وزیراعظم عوام کی توقعات پر کیسے پورا اترتے ہیں۔
تاریخ پیدائش اور بُرج
آئیے ذرا عمران خان کی تاریخ پیدائش پر غور کرتے ہیں اور ان کے بُرج کا حال اور ان کی کامیابی کا راز جاننے کی کوشش کرتے ہیں۔
تاریخ پیدائش: 5 اکتوبر 1952 (عمر 65 سال)۔ مقام: لاہور پاکستان
تاریخ پیدائش کے لحاظ سے عمران خان کا بُرج میزان (Libra) ہے۔ بُرج میزان والے لوگ بہت متجسس اور طاقتور ہوتے ہیں جیسا کہ عمران خان اس عمر میں بھی نظر آتے ہیں۔ یہ لوگ کشادہ ذہنیت کے مالک ہوتے ہیں۔ انکی جستجو انہیں نئی نئی کھوجوں کی طرف مائل کرتی ہے جسکی وجہ سے یہ مختلف چیزوں میں گھسے رہتے ہیں۔ ان لوگوں کو دنیا گھومنے اور رنگینیوں میں رہنے کا بہت شوق ہوتا ہے۔ یہ لوگ تبدیلیوں کو بہت پسند کرتے ہیں۔
غور کیا جائے تو یہ تمام خوبیاں عمران خان میں پائی جاتی ہیں۔

 

اورنگزیب عالمگیر کا بُرج
اصل نام محی الدین محمد تھا لیکن اپنی بہادری کیوجہ سے اورنگزیب عالمگیر کے نام سے پکارے جاتے ہیں۔ مغل سلطنت کے یہ آخری بااثر بادشاہ تھے کیونکہ انکے بعد مغل سلطنت زوال کیطرف چل پڑی۔ نہایت بہادرتھے، ایک بار ان پر ہاتھی نے حملہ کردیا، مگر انہوں نے ہاتھی کو بھی ہرا ڈالا۔ 1658 میں اپنے تین بھائیوں کو قتل کرنے اور باپ کو قید کرنے کے بعد سلطنت کے بادشاہ بنے۔ بھائیوں کو اس لیے قتل کیا کہ وہ بھی انہیں قتل کرنے کی تاک میں تھے۔ مضبوط فوج تیار کر کے انھوں نے کئی ریاستوں پر قبضہ کیا۔
اورنگزیب کافی مذہبی بادشاہ تھے انھوں نے بچپن سے ہی قرآن پاک بڑی دلچسپی سے پڑھا۔ انھوں نے اپنے عہد میں گانے اور رقص پر پابندی لگا دی، کسی بھی دوسرے مذہب کو ہر گز برداشت نہیں کرتے تھے۔ ہندؤں کے کئی مندر انھوں نے توڑ ڈالے۔ انھیں بھی محبت نے اپنا قیدی بنا ہی ڈالا یا وہ کسی سازش کا شکار ہوئے۔ کہا جاتا ہے کہ ایک ناچنے گانے والی عورت ہیرا بائی پر اپنا دل ہار بیٹھے۔ اور کہتے ہیں ناں کہ محبت اندھی ہوتی ہے، اورنگزیب پر بھی کچھ ایسا ہی جادو ہوا اور ہیرا بائی کے اصرار پر بادشاہ سلامت شراب کا گھونٹ پی بیٹھے، مگر بعد میں بہت پچھتائے۔ اورنگزیب کبھی بھی فارغ نہیں بیٹھتے تھے، ہر وقت لوگوں کے کام میں لگے رہتے تھے۔ بہت ایکٹیو شخص تھے۔
تاریخ پیدائش اور بُرج
تاریخ پیدائش: 4 نومبر 1618ء۔ مقام: مغل سلطنت
آئیے ذرا اورنگزیب عالمگیر کی تاریخ پیدائش پر غور کرتے ہیں اور ان کی شخصیت کا حال جاننے کی کوشش کرتے ہیں۔
تاریخ پیدائش کے مطابق انکا برج عقرب ہے۔ برج عقرب کے لوگ بہادر اور پر عزم ہوتے ہیں۔ یہ سچے دوست کی طرح ہمیشہ کام آتے ہیں۔ ہر مسئلےکو اپنی صلاحیتوں کی وجہ سے بخوبی حل کر لیتے ہیں۔ لیکن یہ تشدد پسند بھی ہوتے ہیں۔ اپنے راز کو راز رکھنا پسند کرتے ہیں اور غلطی سے اگر کوئی انکے معاملے میں پڑ جائے تو اسکی خیر نہیں۔ انھیں ذرا ٹھنڈا رہنا چاہیئے۔
اورنگزیب میں یہ تمام عادات موجود تھیں۔


اپنے تاثرات بیان کریں !