Aسے شروع ہونے والے ناموں کا مزاج
Aسے شروع ہونے والے ناموں کا مزاج

جن افراد کا نام A سے شروع ہوتا ہے، ان میں مندرجہ ذیل خصوصیات پائی جاتی ہیں:
  • یہ تخلیقی و خودمختار حرف ہے۔
  • یہ اسی وقت کسی کا مشورہ مانتا ہے جب اس کا دل و دماغ اس کے لئے آمادہ ہو ، ورنہ وہی کرتا ہے جس پر یقین رکھتا ہو۔
  • منفی مزاج والا اے (A) دوسروں پر حکم چلاتا ہے۔
  • ضدی اور نکتہ چین ہوتا ہے۔
  • اس کے دل میں جگہ بنانے سے پہلے اس کے ذہن تک رسائی پائیں۔
  • گول مول باتیں اسے پسند نہیں ہیں۔ اس سے براہ راست بات کیجئے۔
  • اگر آپ اے (A) تک پہنچنا چاہتے ہیں تو پھر اپنے نقطہ نظر کو براہ راست پیش کریں۔
  • اسے ہیراپھیری سے نفرت ہے۔
  • وہ دوسروں کو غم اور المیے سے نہ گھبرانے اور غم کے لمحات کو بردباری اور تحمل سے گزارنے کی تلقین کرتا ہے مگر خود ایسے مواقع پر بے چینی محسوس کرتا ہے۔
  • اس کے مزاج میں تیزی ہوتی ہے اور اس کے فیصلے تلون انگیز کیفیت رکھتے ہیں۔
  • وہ زندگی میں آزادانہ اور خودمختارانہ رویہ اپنانے کی کوشش کرتا ہے۔ جو بڑھ کر ضد، سرکشی اور باغیانہ انداز میں ڈھل جاتے ہیں۔
  • وہ کسی بھی مرحلے پر اپنی شکست قبول کرنے کے لئے تیار نہیں ہوتا۔
  • وہ ہمیشہ اپنے دل و دماغ میں امیدوں کے چراغ روشن رکھتے ہیں اور اپنے مقاصد کے حصول کے لئے مشکلات کی پرواہ نہیں کرتے۔
  • وہ ہمیشہ متحرک رہنا پسند کرتے ہیں اور بیکار بیٹھنا ان کے لیے عذاب سے کم نہیں ہوتا۔ بیکاری انہیں رنجیدہ، افسردہ اور پریشان کردیتی ہے چنانچہ وہ اپنے آپ کو کسی نہ کسی طرح مصروف رکھنا پسند کرتے ہیں اور اس کے لیے دماغی مشاغل کو زیادہ بہتر خیال کرتے ہیں۔
  • ان خواتین کی شخصیت میں ایک عجیب قسم کی جاذبیت اور کشش ہوتی ہے جو انہیں دوسری عورتوں میں ممتاز اور نمایاں کرتی ہے۔
  • یہ خواتین اپنے اندر مغلوب نہ ہونے والی توانائی رکھتی ہیں اور اپنی اس اہلیت کی بدولت ہر صورتحال کا جرأت، ہمت اورحوصلے سے مقابلہ کرتی ہیں۔ اس لیے دوسرے ان سے رہنمائی اور مدد کے لیے رجوع کرتے ہیں اور وہ ان کی ہر طرح مدد کرنے اور ان کی رہنمائی کا فریضہ انجام دینے کے لیے فوراً آمادہ ہوجاتی ہیں۔

دیگر حروف

 
 

 
 
 
 
ہوم پیج دیگر منتخب آرٹیکلز

کرینہ کپور کا بُرج
بولی وڈ کی بیبو جن کا نام سنتے ہی انکا ہر کردار بڑی خوبصورتی سے آنکھوں میں نظر آنے لگتا ہے۔ بیبو نے فلم انڈسٹری میں آتے ہی اپنی قابلیت اور پر اثر انداز سے شائقین کے دلوں میں گھر کر لیا۔ آج تک ویسی ہی حسین وجمیل ہیں جیسی کہ 2002 میں تھیں۔ انکی فٹنس کے پیچھے نہ کوئی جم ہے نہ ورزش ، بلکہ یہ سب یوگا کا کمال ہے۔ یہ خاتون یوگا کے بغیر اپنا دن تصور ہی نہیں کر سکتی۔ اسکے علاوہ کھانے میں بھی یہ میڈم کوئی چکن، مٹن، یا فاسٹ فوڈ نہیں لیتی ۔۔۔ انکا کھانا وہی دیسی دال چاول اور سبزیوں سے شروع ہوتا ہے اور انھی پر ختم۔
بیبو کی بری عادت ناخن چبانا ہے۔ جی با لکل! ناخن چباتی ہے کرینہ ۔ کرینہ کے شاہد کپور سے گہرے مراسم سے تو سب ہی واقف تھے لیکن سیف علی خان سے شادی بڑی ہی عجیب بات ہے، حالانکہ سیف کے دو بچے بھی تھے۔
کرینہ کو دنیا میں اگر کسی چیز کو جمع کرنے کا شوق ہے تو وہ صرف بوٹ ہیں۔ انھیں ہر طرح کے بوٹ لینا اور پہننا اچھا لگتا ہے۔ بہت سے فلاحی ایونٹس کا بھی حصہ بنتی آئی ہیں خواہ وہ تعلیم کیلئے ہو یا عورتوں کی ترقی کیلئے۔
تاریخ پیدائش اور بُرج
آئیے ذرا کرینہ کپور کی تاریخ پیدائش پر غور کرتے ہیں اور ان کی شخصیت کو جاننے کی کوشش کرتے ہیں۔
تاریخ پیدائش: 21 جون 1980 (عمر 37سال)۔ مقام: ممبئی
تاریخ پیدائش کے مطابق انکا برج سنبلہ ہے۔ برج سنبلہ کے لوگوں کی بات کی جائے تو ان میں شفقت، محنت، وفاداری نمایاں عناصر ہیں۔ لیکن جو چیز انکے خلاف ہے وہ انکا ہر وقت کام کرنا اور پھر بھی مطمئن نہ ہونا ہے۔ اتنی محنت کے بعد بھی یہ دوسروں اور اپنے کام میں تنقید کرتے رہتے ہیں، جسکے باعث ساتھ رہنے والے لوگو ں کو تکلیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انھیں خود کو بدلنے کی ضرورت ہے۔
کرینہ کپور میں یہ تما م خوبیاں موجود ہیں۔

 

پرنس چارلس کا بُرج
شہزادہ چارلس، انگلینڈ کی ملکہ الزبتھ کے بڑے صاحبزادے اور مستقبل کے بادشاہ ہیں۔ چونکہ انکا تعلق ایک شاہی خاندان سے ہے تبھی انکا رہنا سہنا اورعادات بھی شاہی نوعیت کی ہیں جو کہ عام بندے کی عقل سے باہر ہیں۔ چارلس جو گاڑی استعمال کرتے ہیں وہ انگریزی شراب سے چلتی ہے ۔۔۔ جی شراب سے۔ شاہی لوگ شاہی انداز۔ لیکن اس شاہی انداز کے باوجود پرنس چارلس وہ پہلے شہزادے ہیں جنھوں نے کسی ادارے سے ڈگری حاصل کی ہوئی ہے۔
پرنس کی ذاتی زندگی ہمیشہ ہی ہائی لائٹ رہی ہےخواہ وہ لیڈی ڈیانا اور انکے تعلقات کی کشیدہ نوعیت ہو یا کمیلا پارکر سے ان کی محبت۔ پرنس کی اپنے والد صاحب سے بھی ذرا اونچ نیچ بھی ہوتی رہتی ہے اور تبھی دونوں کی نہیں بنتی۔ ساتھ ہی ساتھ یہ مصنف بھی ہیں، بلکہ بچوں کے لیے بھی کتابیں لکھتے ہیں۔ پولو کے بہت اچھے کھلاڑی ہیں، اوراسی کھیل کے دوران ہی لیڈی ڈیانا ان پر دل ہار بیٹھی تھی۔
چارلس کے کھانے کے بھی اپنے اصول و ضوابط ہیں انھیں پورے 7 منٹ پکا ہوا انڈا چاہیے ہوتا ہے نہ ایک منٹ زیادہ نہ ایک منٹ کم۔ اگرکبھی ذرا اونچ نیچ ہو جائے تو شیف کی واٹ لگ جاتی ہے۔ ایک اورعجیب بات جو اس شاہی شہزادے کی عادت ہے وہ یہ کہ جب بھی سوتے ہیں برہنہ سوتے ہیں۔ اسکے پیچھے انکی کیا لوجک ہے یہ تو وہی بہتر جانتے ہیں۔ چارلس صاحب چیرٹی بھی بے حد کرتے ہیں اورلوگوں کی فلاح کیلئے ہمیشہ آگے رہتے ہیں۔
تاریخ پیدائش اور بُرج
تاریخ پیدائش: 14نومبر 1948 (عمر70 سال)۔ مقام: لندن
آئیے ذرا پرنس چارلس کی تاریخ پیدائش پر غور کرتے ہیں اور ان کی شخصیت کا حال جاننے کی کوشش کرتے ہیں۔
تاریخ پیدائش کے مطابق انکا برج عقرب ہے۔ برج عقرب کے لوگوں کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ سچے دوست ہوتے ہیں۔ بہادر اور نڈر ہوتے ہیں۔ انکے پاس بہت سے وسائل ہوتے ہیں جسکو استعمال کر کے یہ لوگوں کی مدد بھی کرتے ہیں۔ یہ راز رکھنے والے لوگ ہوتے ہیں اور اگر کوئی ان کا رازفاش کر دے تو پھر اسکی خیر نہیں، یہ تشدد پر اتر آتے ہیں۔ انھیں اپنے غصے اور حسد پر قابو پانا چاہیئے۔
پرنس چارلس میں یہ تمام عادات واضح ہیں۔

 


اپنے تاثرات بیان کریں !